Father Poetry, Father Poetry in Urdu, Father Poetry in Urdu 2 Lines, Father Poetry Sad, Father Poetry Status

Hi Guys! Today I'm very excited about posting the Father Poetry, Father Poetry in Urdu, Father Poetry in Urdu 2 Lines, Father Poetry Sad, Baap Poetry. Hope You Like It.

Father Poetry
Father Poetry

اگر باپ مر جائے تو ماں میں باپ کی طاقت ہوتی ہے مگر 
اگر ماں مر جائے تو باپ میں باپ بننے کی طاقت بھی نہیں رہتی 

Agar Baap Mar Jaye Tu Maa Ma Baap Ki Takkat Hoti Hai Magar 
Agar Maa Mar Jaye Tu Baap Ma Baap Banane Ki Takkat Bhe Nahi Rehti

Father Poetry
Father Poetry

ان کے ہونے سے بخت ہوتے ہیں 
باپ گھر کے درخت ہوتے ہیں 

Unke Hone Se Bakhat Hote Hain
Baap Ghar Ke Darakht Hote Hain

Father Poetry
Father Poetry

دنیا میں سب سے کم کوشش سے جو انسان خوش 
ہوتے ہیں وہ والدین ہیں۔ بہت معمولی بہت ہی معمولی 
کوشش سے خوش ہو جاتے ہیں 

Dunyia Ma Sab Se Kam Koshish Se Jo Insaan 
Khush Hote Hain Woh Waldain Hain Bahut Mehmoli 
Bahut Hi Mehmoli Koshish Se Khud Ho Jate Hain

Father Poetry
Father Poetry

یتیمی ساتھ لائی ہے زمانے بھر کے دکھ 
سنا ہے باپ زندہ ہو تو کانٹے بھی نہیں چبھتے 

Yatimi Sath Lai Hai Zamane Bhar Ke Dukh 
Suna Hai Baap Zinda Ho Tu Kante Bhe Nahi Chubte 

Father Poetry
Father Poetry

اولاد کے لیے باپ وہاں ہاتھ پھیلا دیتا ہے 
جہاں وہ پاؤں رکھنا بھی گوارا نہیں کرتا 

Ulaad Ke Liye Baap Wahan Hath Phela Deta Hai 
Jahan Woh Paon Rekhna Bhe Gawara Nahi Karta 

Father Poetry
Father Poetry

ماں باپ کا ہاتھ پکڑ کے رکھیں 
کسی کے پاؤں پکڑنے کی ضرورت نہیں پڑے گی 

Maa Baap Ka Hath Pakar Ke Rekhe 
Kisi Ke Paon Pakarne Ki Zarurt Nahi Pare Gi

Father Poetry
Father Poetry

مانا کے محبت بری نہیں ہے لیکن 
ماں باپ سے زندہ ضروری بھی نہیں ہے 

Mana Ke Muhabbat Buri Nahi Hai Lekin
Maa Baap Se Zinda Zaruri Bhe Nahi Hai 

Father Poetry
Father Poetry

ماں باپ کے پاس بیٹھنے کے دو فائدے ہیں 
آپ کبھی بڑے نہیں ہوتے اور ماں باپ کبھی بوڑھے 
نہیں ہوتے 

Maa Baap Ke Pass Baithne Ke Do Faide Hain
App Kabhi Bare Nahi Hote Aur Maa Baap Kabhi 
Bure Nahi Hote

Father Poetry
Father Poetry

اے قلم روک جا آدب کا مقام ہے 
تیری نوک کے نیچے میرے ماں باپ کا نام ہے 

Aye Kalam Rok Jaa Adab Ka Mukaam Hai 
Teri Nook Ke Neche Mere Maa Baap Ka Naam Hai 

Father Poetry
Father Poetry

مجھ کو معلوم بادشاہ کیسا ہوتا ہے 
میرا خیال ہے میرے بابا جیسا ہوتا ہے 

Mugh Ko Maloom Badshah Kaisa Hota Hai 
Mera Khayal Hai Mere Baba Jaisa Hota Hai 

Father Poetry
Father Poetry

دن بھر تڑپتی دھوپ میں کرتا رہا وہ مزدوری 
جب اجرت ملی تو رو پڑے ہاتھ کے چھالے 

Din Bhar Tarapti Dhoop Ma karta Raha Woh Mazdori 
Jab Ujrat Mili Tu Roo Pare Hath Ke Chale 

Father Poetry
Father Poetry

باپ ایک ایسا شجر ہے جس کے 
سائے میں بیٹیاں راج کرتی ہیں 

Baap Aik Aisa Shajar Hai Jiske 
Saye Ma Betian Raj Karti Hain

Father Poetry
Father Poetry

باپ ہر چیز لاتا ہے ہر خواہش پورا کرتا ہے 
بیٹی کے لیے جو نہیں بدل سکتا وہ ہے بیٹی کا نصیب 

Baap Har Chiz Lata Hai Har Khaesh Pora Karta Hai 
Beti ke Liye Jo Nahi Badal Sakta Woh Hai Beti Ka Naseeb 

Father Poetry
Father Poetry

اللہ کی رضا ماں باپ کی رضا میں ہے 
اور اللہ کی سختی ماں باپ کی سختی میں ہے 

Allah Ki Raza Maa Baap Ki Raza Ma Hai 
Aur Allah Ki Sakhti Maa Baap Ki Sakhti Ma Hai

Father Poetry
Father Poetry

باپ کی دولت نہیں سایہ ہی کافی ہوتا ہے 

Baap Ki Dolat Nahi Saya Hi Kafi Hota Hai 

Father Poetry
Father Poetry

چاہے کتنا بوڑھا ہو مگر گھر کا سب سے مضبوط 
ستون باپ ہی ہوتا ہے 

Chahe Kitna Burha Ho Magar Ghar Ka Sab Se Mazbot 
Satoon Baap Hi Hota Hai 

Father Poetry
Father Poetry

اس دنیا میں آپ کا باپ وہ واحد شخص ہے 
جو چاہتا ہے کہ آپ اس سے زیادہ کامیاب ہو 

Is Dunyia Ma Apka Baap Woh Wahid Shaks Hai 
Jo Chahata Hai Ke Ap Us Se Zaida Kamyab Ho 

Father Poetry
Father Poetry

جڑی تھی اس کی ہر ایک ہاں میری ہاں سے 
یہ بات سچ ہے میرا باپ کم نا تھا میری ماں سے 

Juri Thi Uski Har Aik Haan Meri Haan Se 
Yeah Bat Such Hai Mera Baap Kam Na Tha Meri Maa Se 

Father Poetry
Father Poetry

پکڑ کے ہاتھ اس نے ہاتھ میں گھر سے نکالا ہے 
پکڑ کے ہاتھ جس کو ہاتھ میں چلنا سکھایا تھا 

Pakar Ke Hath Us Na Hath Ma Ghar Se Nikala Hai 
Pakar Ke Hath Jis Ko Hath Ma Chalna Sekhaya Tha 

Father Poetry
Father Poetry

عزیز تر وہ مجھے رکھتا تھا رگِ جاں سے 
یہ بات سچ ہے میرا باپ کم نہ تھا میری ماں سے 

Aziz Tar Woh Mughe Rekhta Tha Rag e Jaan Se 
Yeah Bat Such Hai Mera Baap Kam Na Tha Meri Maa Se 

Thanks For your Love & Support 


Post a Comment

0 Comments